sahil is the online Urdu magazine user can access and read free content on different subjects including philosophy, sociology, political and theology

Sahil Maghzine

جمعہ، 19 جون، 2020

علامہ اقبال کا انائے متطلق اور تصور امکان مذھب کیا ہے؟


iqbal islamic sufism  absolute ego


علامہ اقبال اور (absolute ego) انائے محدود

اقبال مرحوم کا (absolute ego) انائے محدود، انائے مطلق، مطلق وجود اور وجود کیا ہے؟ کیا ان کے مراتب ہوسکتے ہیں؟ تکملہ وجود کا آخری درجہ کیا ہے؟ مرتبہ وجود اور شہ رگ کا آپس میں کیا تعلق ہے؟ کیا خدا کائنات سے ماورا ہے یا کائنات کی عین بن کر کائنات میں مخفی ہے؟ کیا اشیائے کائنات کے اناؤں کے مجموعے کا نام ہے؟ نفس انسانی میں پوشیدہ حقیقت اور نفس کائنات کی حقیقت کیا ہے؟


علامہ اقبال, وجودیت اور Sufism


 کیا اقبال مرحوم وجودی تھے اور ابن عربی سے متاثر تھے؟ عموما لوگ اقبال مرحوم پر پر یہ الزام لگاتے ہیں کہ وہ حضرت شیخ اکبر سے بہت متاثر تھے اور خطبات میں اسی تاثر کی علمی وضاحت مغربی فلسفے کے تناظر میں کی گئی ہے۔ اقبال مرحوم شیخ اکبر کی تعلیمات سے براہ راست واقف نہ تھے شیخ اکبر کو عربی زبان پر عبور کے بنا پڑھنا اور سمجھنا بہت مشکل ہے۔ اقبال مرحوم کو ان سے دلچسپی تھی کیونکہ اس زمانے میں یورپ ابن عربی سے بے حد متاثر تھا انگریزی تراجم کے ذریعے وہ شیخ کی تعلیمات پڑھ رہے تھے۔ مجھ سے بھی خواہش ظاہر کی تھی کہ تعلیمات شیخ اکبر کی تلخیص پیش کر دوں تا کہ دوران مطالعہ وہ پیش نظر رہے ،انہیں مسئلہ زمان و مکاں سے خاص دلچسپی تھی۔اور مغرب سطح طبقات اور اہل مغرب کو بتانا چاہتے تھے کہ ہمارے یہاں بھی بہت پہلے ان مباحث پر کام ہو چکا ہے لہذا مجھ سے اور مختلف علما سے شیخ اکبر کی تعلیمات افکار کتابوں کے بارے میں استفسار کرتے رہے تھے کے شیخ کے یہاں حقیقت جمع کیا ہے ہے کس کس کتاب میں تفصیل ہے۔متکلمین اور شیخ کی حقیقت زماں کا فرق کیا ہے ۔ابن عربی کی کتابوں پر اقبال مرحوم کی گرفت کمزور تھی لہذا اقبال کو ابن عربی کا خوشہ چین کہنا درست نہیں ایران کی مابعد الطبیعات کے مطالعے کے دوران وہ تصوف سے چڑھ گئے تصوف کو مسلمانوں کی تباہی کا سبب خیال کرتے تھے اس کے برعکس( individualism) انفرادیت کی حمایت کرتے تھے جبکہ تصوف کی خاص بات فردیت ہے، اسرار خودی کا دیباچہ تصوف پر سخت تنقید تھی حسن نظامی ناراض ہوگئے لہذا اسے خارج کردیا گیا لیکن یہی خیالات اقبال نے نکلسن سے انگریزی دیباچے میں لکھو آئے جس میں All forms of pantheistic Sufism اور  کی شدید مذمت کی ہے حیرت ہے کہ اقبال مرحوم مغرب کی دو گمراہیوں Freedom اور individualism کو قبول کرتے ہیں لیکن مشرق کے تصوف کو عجمی قرار دے کر رد کر دیتے ہیں۔ Absolute Ego سے ملنے اور حیات ابدی حاصل کرنے، فنا ہونے لیکن بقا پانے اور اپنے وجود کی انفرادیت برقرار رکھتے ہوئے Absolute Ego سے ملنے کا تصور اور لیکن الگ رہنے اور اپنا تک فروخت بھی برقرار رکھنے کا فلسفہ اقبال مرحوم کا ناقابل فہم نقطہ نظر ہے۔ وہ خدا کی تلاش کو انسان کی تلاش کے معنی میں لیتے ہیں کہ یہی باطن کی تلاش ہے لیکن یہ تلاش خود کیا ہے اس کی تشریح وہی کرسکتے ہیں۔

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں